Mar 052014
 

gulab khailPESHAWAR: The Culture Journalists Forum (CJF ) celebrated music freedom day across Khyber Pakhtunkhwa including Malakand, Swat, Bunir, Swabi, Mardan, Nowshera, Charsadda, Lakki Marwat, Bannu, D I Khan andPeshawar. The Culture Journalists Forum (CJF) and Takhleeq Development Foundation (TDF) jointly arranged a musical evening at Peshawar Services Club here on Monday. Mian Iftikhar Hussain graced the event as the chief guest.

سی جے ایف اور ٹی ڈی ایف کے زیر اہتمام یوم آزادی موسیقی کی تقریب کا انعقاد
سی جے ایف اور ٹی ڈی ایف کے زسی جے ا کلچر جرنلسٹس فورم خیبر پختونخوا کے زیر اہتمام گزشتہ روز صوبہ بھر میں یوم آزادی موسیقی منایا گیایف اور ٹی ڈی ایف کے زیر اہتمام یوم آزادی موسیقی کی تقریب کا انعقاد
سی جے ایف اور اور تخلیق ڈویلپمنٹ فاؤنڈیشن کے اشتراک سے بڑی تقریب پشاو ر سروسز کلب میں منعقد ہوئی یوم آزادی موسیقی کی تقریب کا انعقاد
ڈی ڈی حکومت جلد از جلد ثقافتی پالیسی اسمبلی سے منظور کراکے اس پر عمل درآمدکرائیں ‘ فنکاروں کو تحفظ اور باقاعدگی سے ثقافتی سرگرمیوں کے انعقاد کو یقینی بنائے‘ احتشام طورو‘ارشد حسین‘خادم حسین‘ میاں افتخار حسین

ٗفنکاروں کی امداد کے لئے جلد انڈومنٹ فنڈ قائم کیا جائے ٗثقافت کے فروغ میں موسیقی کا اہم کردار ہے‘ مقررین
ہمایون خان ٗبختیار خٹک ٗشاہ سوار خان ٗ سمیع خان ٗصائمہ ناز ٗرضوانہ خان ٗسدرہ خان اور عینی کی شاندار گائیگی اور معروف رباب نواز گلاب خیل کی بھی شاندار پرفارمنس

humyunArtists and singers were unanimous on the agenda of providing security and financial support to them throughout the province .The artists and singers have demanded of the KP government to address their security and financial issues.  They said their families literally starve because of their poor financial condition. They said they were waging war against the unabated onslaught by militants on art and culture. Young and old singers including Shahsawar, , Humayoun Khan, Bakhtiyar Khattak, Saima Naz, , sidra khan , aini khan ` rizwana khan ` sami khan  and Gulab Afridi performed on the event.

Speaking on the occasion he said that music could be used to propagate message of peace and harmony among people adding that during tenure of his government he did much for boosting literary and cultural activities and set up a culture directorate for addressing genuine issues of the singers and artists.  He said singers were responsible for preserving oral history of Pashtuns through their art.

shah sawar

The government of Khyber Pakhtunkhwa should announce a well-articulated cultural policy as it would change the miserable plight of the artists of the militancy plagued province, Mr Hussain said.  He said his government had extended financial support to hundreds of singers and artists but regretfully it does not seem to be the priority of the incumbent KP government, he said.

Khadim Hussain Managing Director of Bacha Khan Educational Foundation (BkEF) said that artists

were a great asset and they should be protected at all costs.  He said that negative forces were bent upon eliminating Pashtun’s cultural identity but they would never succeed in their evil designs.  Cultural identity cannot be wiped out because it lived among people arguing that despite all odds Pashto music improved over the years as new singers emerged, he observed.

Ihtisham Toru president Culture Journalists Forum (CJF) demanded of the KP government to solve problems of the artists and singers. He said artists and singers had no voice to raise their issues, however, previous KP government had kept alive spirit of artist’s community. “We have several times tried our best to walk up to the high- ups of the KP culture department and culture directorate do something about issues of the artists but no avail, we shall continue to talk on their behalf at every forum, artists and singers are being faced by numerous problems including security and financial constraints which needs immediate solution,’ he urged.

Noted TV actor and president of Takhleeq Development Foundation (TDf) Arshad Hussain said that artists and singers were the most vulnerable segment of the society. He said successive governments had been ignoring them.  Institutions are there, even cultural policy document which was prepared in the tenure of ANP led  KP government is also lying in the shelf but nobody is bothering to bring it out to at least have a glance at it , Mr Hussain regretted.

Wazir Khan Afridi a young folk singer complained that local media’s was mistreated his community. A week ago media ran false news of my death which was shocking for me as well for my fans. Despite my clarification no news outlet ran it. “We expect media to become our voice but it is other way round,’ he said.

Tariq Jamal president artists organization Awaz said that 95 per cent artists and singers lived at rented rooms in the city, most of them had been confined to city only because of law and order. “Even Nishtar hall is not functional for them because KP government has not arranged any function or event to encourage them, he said.

 

کلچر جرنلسٹس فورم خیبر پختونخوا کے زیر اہتمام گزشتہ روز صوبہ بھر میں یوم آزادی موسیقی منایا گیا اس حوالے سے سی جے ایف اور اور تخلیق ڈویلپمنٹ فاؤنڈیشن کے اشتراک سے بڑی تقریب پشاو ر سروسز کلب میں منعقد ہوئی جس میں فنکاروں‘ سیاسی رہنماؤں‘ صحافیوں اور دیگر طبقہ ہائے فکر سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ اس موقع پر مقررین نے جلد از جلد ثقافتی پالیسی کے ڈرافٹ کو صوبائی اسمبلی سے منظور کراکر اس پر عمل درآمد ‘ فنکاروں کو تحفظ کی فراہمی اور باقاعدگی کے ساتھ ثقافتی سرگرمیوں کا انعقاد کو یقینی بنانے اورفنکاروں کی بدحالی اور انکے معاشی استحکام و امداد کے لئے جلد از جلد انڈومنٹ فنڈ قائم کیا جائے ٗ کے مطالبات کئے ۔ تقریب سے خطاب میں فورم کے صدر احتشام طورو نے کہا کہ کسی بھی قوم کی ثقافت کو فروغ دینے میں موسیقی کا اہم کردار ہوتا ہے لیکن افسوسناک امر یہ ہے کہ موجودہ حکومت نے خاص طور پر ثقافت کو نظر انداز کر رکھا ہے جس سے نہ صرف اس شعبے سے وابستہ فنکاروں میں مایوسی کی لہر پیدا ہوگئی ہے بلکہ ادبی و عوامی حلقوں میں بھی اس حوالے سے تشویش پائی جاتی ہے کیونکہ کوئی بھی قوم ثقافت کے فروغ کے بغیر ترقی نہیں کر سکتی ۔معروف ٹی وی اداکار ‘میزبان اور ٹی ڈی ایف کے چیئرمین ارشد حسین نے کہا کہ سابق حکومت نے ثقافت سرگرمیوں کو زندہ رکھنے میں اہم کردار ادا کیا لیکن موجودہ حکومت میں اس حوالے سے دلچسپی دیکھنے میں نظر نہیں آرہی جو ایک افسوسناک امر ہے ۔ موجودہ حالات میں ثقافتی سرگرمیوں کا انعقاد آسان کام نہیں لیکن جب تک مختلف طبقہ فکر کے لوگ آگے بڑھ کر اس میں خود حصہ نہیں ڈالیں گے تب تک اس کا فروغ ممکن نہیں ۔ صرف باتوں سے کام نہیں چلے گا ۔ عملی قدم بھی اٹھانا چاہئے ۔ باچا خان ایجوکیشنل ٹرسٹ کے چیئرمین خاد م حسین نے کہا کہ پختون ثقافت کو نقصان پہنچانے کیلئے ہر دور میں مختلف ہتھکنڈے استعمال کئے گئے لیکن ہم ایسے عناصر کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔ ثقافتی پالیسی پر جلد از جلد عمل درآمد ضروری ہے ورنہ نتائج اچھے ثابت نہیں ہوں گے ۔ سابق وزیر اطلاعات و ثقافت میاں افتخار حسین نے کہا کہ جب تک فنکار برادری یکجا نہیں ہوگی تب تک نہ تو ثقافت کو فروغ دیا جا سکتا ہے اور نہ ہی فنکاروں کے مسائل حل ہو سکتے ہیں ۔ مختلف تنظیموں کو یکجا ہو کر ایک بڑی تنظیم بنانی چاہئے تاکہ حکومت تک آواز پہنچانے میں آسانی ہو ۔ معروف اداکار اور پروفیسر جمیل چترالی نے کہا کہ کسی بھی قوم کی ترقی میں ثقافت اور موسیقی کو اہمیت حاصل ہے لیکن بدقسمتی سے ہمارے ہاں اسے اچھی نظر سے نہیں دیکھا جاتا ۔ نوجوان نسل کے نمائندہ گلوکار ہمایون خان‘ بختیار خٹک ‘ شاہسوار خان اور گلاب خیل نے کہا کہ موجودہ حالات میں آزادی موسیقی کا دن بنانا بڑے دل گردے کا کام ہے ۔ موسیقی کی مارکیٹ دن بدن خراب ہوتی جا رہی ہے جس سے فنکاروں میں مایوسی پھیل رہی ہے کیونکہ جب فنکار کا کام فروخت ہونا بند ہو جائے تو پھر وہ کوئی تخلیق نہیں کر سکتا اس لئے جب تک حالات میں بہتری نہیں آئے گی تب تک موسیقی کا احیاء ہونا ممکن نہیں اس حوالے سے موجودہ حکومت کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔ تقریب میں ڈائریکٹر ثقافت بہرہ مند خان ٗ معروف اداکار طارق جمال‘ موسیقار نذیر گل‘ زرداد بلبل‘ شاہجہان خان‘ حاجی اشفاق‘ کرن خان‘ الیاس خان‘ سی جے ایف کے نائب صدر امجد علی خادم ٗجائنٹ سیکرٹری عنایت الرحمن ٗفنانس سیکرٹری امجد ہادی یوسفزئی اور فاٹا کے کوآرڈی نیٹر شیر عالم شینواری نے بھی شرکت کی ۔ تقریب میں محفل موسیقی کا اہتمام بھی کیا گیا جس میں ہمایون خان‘ بختیار خٹک‘ شاہسوار خان‘ سمیع خان صائمہ ناز ٗسدرہ خان‘ عینی خان‘ رضوانہ خان اور معروف رباب نواز گلاب خیل نے اپنے فن کا شاندار مظاہرہ کیا اور داد وصول کی ۔

کلچر جرنلسٹس فورم کے زیر اہتمام یوم آزادی موسیقی کے حوالے سے صوبہ بھر میں تقریبات و محفل موسیقی
پشاور ( ) کلچر جرنلسٹس فورم خیبر پختونخواکے زیر اہتمام صوبہ بھر کے اضلاع سوات ٗملاکنڈ ٗبونیر ٗمر دان ٗڈیرہ اسماعیل خان ٗبنوں اور لکی مروت میں یوم آزادی موسیقی کے حوالے سے تقریبات اور محفل موسیقی کا انعقاد کیا گیا ۔ اس حوالے سے بنوں میں منعقدہ تقریب کے مہمان خصوصی ریڈیو پاکستان کے ڈائریکٹر رضا محمد خٹک تھے ‘ صدارت نامور شاعر غازی سیال نے کی ۔ تقربب میں بنوں کی صدارتی ایوارڈ یافتہ گلوکارہ گلوکارہ گلنار بیگم مرحومہ کو خراج عقیدت پیش کیا گیا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ کنونیئر عبدالسلام بیتاب ‘ کریم اللہ محسود‘ محبو ب الرحمان چیئرمین‘ اقبال حسرت‘ جاوید احساس‘ سردار علی بنوچی‘ فلک نازاور عبدالرحمان داوڑنے کہا کہ پشتون قوم کی موسیقی بھی پشتون قوم کی طرح رعب دار اور مطانت بھری ہے اور اسی طرح اس کے رقص اتن میں بھی شائستگی اور وقار ہے جس پر پشتون قوم کو فخر ہے ۔ مقررین نے مقامی ثقافت کو فروغ دینے پر کلچر جرنلسٹس فورم کو سراہا ۔ بٹ خیلہ میں منعقدہ تقریب سے خطاب میں سی جے ایف ملاکنڈ کوآرڈی نیٹر گوہر علی گوہر ‘ گلوکار سردار یوسفزئی ‘ ملاکنڈ پریس کلب کے سرپرست اعلیٰ جمعہ رحمان افگار‘ ناصر حیات ‘ دیدار طاہر‘ اقبال جان‘ احمد گل ‘ رحمت جان ‘ لعل باچا‘ محمد رسول رسا‘ احسان ساگر اور حسین خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دنیا بھر میں موسیقی کی آزادی دن منایا جاتا ہے مگر ملاکنڈ کے موسیقار اور گلوکار وں سمیت دیگر ہنرمند افراد دو وقت کے روٹی کیلئے ترس رہے ہیں جبکہ انہیں ہر طرح کے خطرات کا بھی سامنا رہتا ہے محکمہ ثقافت کو سالانہ کروڑوں روپے فنڈ ملنے کے باوجود اسے ثقافت سے وابستہ افراد کی فلاح و بہبود پر خرچ کرنے کے بجائے مخصوص افراد پر خرچ کیا جارہا ہے ۔ لکی مروت میں منعقدہ تقریب میں مختلف علا قوں سے تعلق رکھنے والے فنکا ر وں ‘ہنر مندوں‘ صحا فیو ں اور عام لوگوں نے شرکت کی‘ تقریب میں گلوکار ثنا ء اللہ عرف خانی‘ جمشید عرف پپی استا د‘، سر فرا ز اور الطا ف نے اپنے فن کا مظا ہرہ کیا جبکہ مقا می مزا حیہ فنکا روں طور علی عرف طورو ‘ تا ج علی‘ نعیمی ‘ پیلا اور سعد اللہ نے اپنے فن سے لو گوں کو محظوظ کیا تقریب کے اختتام م پر علاقا ئی اور روا یتی رقص اتن بھی پیش کیا گیا ۔ سی جے ایف کے ضلعی کنونیئر محمد زبیر مروت اور دیگر مقررین نے صو با ئی حکو مت سے مطا لبہ کیا کہ فنکا روں اور ہنر مندوں پر مشتمل ڈائریکٹری کو جلد از جلد شا ئع کی جا ئے اور غریب فنکا روں و ہنر مندوں کی مالی مدد کی جا ئے ۔ سی جے ایف مردان اور اور آئیڈ یا وژن کے زیر اہتمام مردان پریس کلب میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں سی جے ایف مردان کے کنونیئر ریاض مایار ‘ڈپٹی کنو نیئر عبداللہ شاہ بغدادی ‘ آئیڈ یا وژن کے منیجنگ ڈائریکٹر اجمل شاہ یوسفزئی ‘ ایگزیکٹو ڈائریکٹر علی یوسفزئی ‘ محقق و تاریخ دان فرہاد علی خاور‘ عمران صفی اور دیگر نے معاشرے میں فنکاروں اور گلوکاروں کے کردار کی اہمیت پر تفصیل سے روشنی ڈالی اور موسیقی کو روح کی غذا قرار دیا ۔ اس موقع پر شاکر خان ‘ لیلیٰ ‘ محمد زرین ‘ساجد اعوان ‘ ذاکر باچہ اور چھوٹا جلال مردانوی نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا ۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']